چین پاکستان کو قرضہ نہیں دے گا بلکہ۔۔۔“ چینی حکومت نے بڑا اعلان کردیا
chinese embassy loan imran khan

پاکستان میں تعینات چینی قونصل جنرل لانگ ڈنگ بِن نے کہا ہے کہ چین، پاکستانی معیشت کے استحکام کیلئے قرض فراہم کرنے کی بجائے مختلف سیکٹرز میں سرمایہ کاری کرے گا‘اس سے پاکستان کو مالیاتی بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی مشکل وقت میں پاکستان کو تنہانہیں چھوڑیں گے‘پاکستان کے گردشی قرضوں کا بوجھ بڑھانے میں سی پیک کا کوئی کردار نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان کے چین کے حالیہ دورے میں دونوں ممالک کے درمیان 15 نئے معاہدوں پر دستخط کیے گئے تھے جو سیاست اور مالیاتی سیکٹر میں تعاون فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ثقافتی تعلقات کو بہتر بنانے میں بھی مدد دیں گے۔ چینی قونصل جنرل نے کہا کہ چین، پاکستان کو نئے منصوبوں میں سرمایہ کاری کی صورت میں مختلف بیل آﺅٹ پیکجز فراہم کرے گا‘ نئے تجارتی منصوبوں کے آغاز سے پاک چین اقتصادی راہداری ( سی پیک) کا دائرہ وسیع ہوجائے گا۔چینی قونصل جنرل نے کہا کہ چین پاکستان کو مشکل وقت میں تنہا نہیں چھوڑے گا اور پاکستانی معیشت کو مضبوط کرنے کے لیے زیادہ سے زیادہ امدادی ذرائع فراہم کرے گا۔لانگ ڈنگ بن نے کہا کہ 22 منصوبوں میں صرف 4 کا آغاز سی پیک کے فراہم کردہ قرض کے ذریعے کیا گیا تھا جبکہ دیگر منصوبے سرمایہ کاری کی بنیاد پر کیے گئے تھے جو پاکستانی معیشت کو مضبوط بنائیں گے۔نیوزایجنسیوں کے مطابق انہوں نے کہا کہ کراچی میں قونصل خانے پر حملے کے بعد لاہور میں قونصل خانے کی عمارت کی سکیورٹی بڑھادی گئی‘قانون نافذ کرنے والے اداروں اور پنجاب حکومت کے تعاون سے دو درجاتی سکیورٹی طریقہ کار ترتیب دیا گیا تھا۔کراچی میں قونصل خانے پر حملے میں اپنی جان قربان کرنے والے پولیس افسران کی بہادری کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کے ملک کے سفارتکار مستقل فنڈ قائم کرنے پرغور کر رہے ہیں جو نہ صرف شہید پولیس اہلکاروں کے اہلِ خانہ کو مالی مدد فراہم کرےگا بلکہ پاکستان کے مستحق افراد کی مدد بھی کرےگا۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں