پیسکو میں نئی بھرتیو ں کا اعلان کب ہو گا ؟ حکو مت کے اعلان نے بے روز گا رو ں کی امید تازہ کر دی
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
jobs government announced

اچھی کارکردگی دکھانے والے پسکوملازمین کو بونس دیا جائے گا۔پسکو ملازمین محنت کرکے پسکو کو منافع بخش ادارہ بنائیں۔

یہ بات وزیرمملکت برائے توانائی (پاورڈویژن)چوہدری عابد شیر علی نے ایبٹ آباد میں پسکو ملازمین سے اپنے خطاب میں کہی ۔اس موقع پر این ٹی ڈی سی حکام,منتحب عوامی نمائندے ,چیف ایگزیکٹیوپسکوانجینئرشبیراحمد,تمام چیف انجینئرز ,تمام ایس ایزاورتمام پسکو فیلڈ افسران موجود تھے۔وزیرمملکت چوہدری عابدشیرعلی نے کہا کہ پسکو آپ کی کمپنی ہے ۔آپ محنت کرکے اس کو منافع بخش ادارہ بنائیں ۔اورجس سرکل کی ریکوری اورکارکردگی اچھی ہوئی تو ملازمین کی حوصلہ افزائی کے لئے ان کو بونس دیا جائے گا۔وزیرمملکت نے کہا کہ پسکوکارکردگی کو مزید بہتربنانے کے لئے اورسٹاف کی کمی کودورکرنے کے لئے نئی بھرتی کے احکامات جاری کردئیے گئے ہیں اورچندہفتوں میں بھرتی کا شفاف اورمیرٹ پر بھرتی کا عمل شروع ہوجائے گا۔بھرتی میں پسکوملازمین کے بچوں کو بھی کوٹہ کے مطابق بھرتی کیاجائے گا۔ وزیرمملکت نے کہا کہ عوام کوسہولیات کی فراہمی ہماری اولین ترجیح ہے ۔عوام کے بجلی سے متعلقہ مسائل کوحل کریں اوران کی دعائیں لیں۔ وزیرمملکت نے پسکوافسران کو ہدایت کی کہ ماہانہ بنیاد پر سرکل ,ڈویژن اورسب ڈویژن کی سطح پر کھلی کچہریاں باقاعدگی سے منعقدکریں اورعوام کے بجلی سے متعلقہ مسائل کو فوری حل کریں۔صارفین کے لئے مشکلات پیدا کرنے والوں کو قطعا برداشت نہیں کیا جائے گا۔صارفین کی عام نوعیت کی شکایات پرفور ی ایکشن لیں , جلنے اورخراب ہونے کی صورت میں ڈسٹری بیوشن ٹرانسفارمرز کی فوری تبدیلی کو یقینی بنائیں اور عوام کو دفتروں کے چکرنہ لگوائیں۔ وزیرمملکت نے کہا کہ ہم اورآپ ایک ہیں آپ نے حکومت کے ویژن کے مطابق بجلی کی مد میں اٹھائے گئے انقلابی اقدامات کے ثمرات عوام تک پہنچانے ہیں۔حکومت نے 8500 میگاواٹ کی بجلی سسٹم میں شامل کی ہے جبکہ صوبہ خیبرپختونخواہ میں اربوں روپوں کی لاگت سے ڈسٹری بیوشن سسٹم کو بہتربنانے کے لئے نئی ٹرانسمشن لائنز بچھا ئی جارہی ہیں۔ تمام نئے زیرتکمیل پراجیکٹس 31 مارچ 2018 تک مکمل کرلئے جائیں گے۔جس سے پورے صوبہ میں بجلی کی مجموعی صورتحال میں مزید بہتری آئے گی۔چوہدری عابدشیرعلی نے کہا کہ فرائض میں غفلت کا مظاہرہ کرنے والوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ میں آئندہ میٹنگ میں پسکوکی کارکردگی کا جائزہ لوں گا اور خراب کارکردگی کے حوالے سے قصوروار ملازمین کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں