اسد عمر سے تلخ کلامی کی خبریں غلط،تحریک انصاف کی حکومت کو کوئی خطرہ نہیں
jahangir tareen asad umer imran khan

پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما جہانگیر خان ترین نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت کو کوئی خطرہ نہیں ہے ،وزیر اعظم عمران خان  مجھے جو ٹاسک دیتے ہیں وہ سرانجام دیتا ہوں

عمران خان اب بھی مجھ پر اتنا ہی اعتماد کرتے ہیں جتنا پہلے کرتے تھے،میں کوئی حکومتی عہدہ تو نہیں رکھ سکتا لیکن پاکستان کی خدمت کرنا نہیں چھوڑ سکتا،وزیر خزانہ اسد عمر کے ساتھ میری تلخ کلامی کی تمام خبریں غلط ہیں،فیصلے کرنے سے ہی ملک آگے بڑھتے ہیں ،اگر 80 فیصد فیصلے درست ہو جائیں تو یہ بہت بڑی کامیابی ہے ۔پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما جہانگیر خان ترین کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی ٹیم کمزور نہیں بلکہ نئی ہے، تمام وزرا بہترین کارکردگی دکھانے میں اپنی صلاحیتیں صرف کرنے میں مصروف عمل ہیں، ہمیں وراثت میں خراب معیشت اور خالی خزانہ ملا،ڈالر کی قیمت میں اضافے کے ہم سب ذمہ دار ہیں صرف وزیرخزانہ اسد عمر کو اس کا قصوروار نہیں ٹھرایا جا سکتا، پی ٹی آئی قیادت ٹیم ورک پر یقین رکھتی ہے، ہمیں چاہیے تھا کہ حکومت میں آنے کے دو ہفتے کے بعد ہی عوام کو ملکی معیشت کی خراب حالت کے بارے میں آگاہ کر دیا ہوتا۔انہوں نے کہا کہ عمرانخان ایک لیڈر ہے اور اس ملک کی عوام نے انہیں بھر پور سپورٹ کیا ہے ،پاکستان تحریک انصاف اور حکومت کی ڈرائیونگ فورس عمران خان کے ہاتھ میں ہے ،ہماری حکومت کو کوئی خطرہ نہیں ہے ،پی ٹی آئی حکومت مستحکم ہے اور آنے والے دنوں میں مزید مضبوط ہوتی جائے گی،پی ٹی آئی حکومت اپنی مدت ضرور  پوری کرے گی۔جہانگیر خان ترین کا کہنا تھا کہ خان صاحب نے 22 سال جدوجہد کی ہے ،احتساب کرنے کا وعدہ ان کا قوم سے ایک بہت بڑا وعدہ تھا،صرف وہ ہی نہیں ہم بھی سمجھتے ہیں کہ اس ملک کو کرپشن نے کھوکھلا کر دیا ہے، اگر وہ چوروں کو پکڑنے کی بات کرتے ہیں تو بالکل صحیح کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ  نیب ایک اچھا ادارہ ہے جس نے ماضی میں بہت سے لوگوں کے خلاف بہترین فیصلے کیے ہیں مگر نیب کو ابھی سے زیادہ بااثر ہونے کی ضرورت ہے،نیب میں اصلاحات کی ضرورت ہے لیکن اس کو مزید موثر اور مضبوط ہونا چاہئے ،کرپشن روکنے کے لئے حکومت نیب کو مزید با اختیار کرے گی ،نیب کا قانون بہت اچھا ہے لیکن اس میں بہت زیادہ بہتری کی ضرورت ہے ۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں